Random Member


Sohaib Siddiqui
Do you like new look of ATTOCK news website?

Total Members

3135 registered
0 today
0 yesterday
0 this week
0 this month
Attock
27°C
بلدیاتی نظام کے تحت کرپشن اور بے ضابطگیوں کے نئے ریکارڈ
 
فتح جنگ: ٹی ایم اے فتح جنگ میںپرویز مشرف کے دیے گئے موجودہ بلدیاتی نظام کے تحت کرپشن اور بے ضابطگیوں کے نئے ریکارڈ قائم ہوئے ہیں یہاں تعینات افسران کیلئے ٹی ایم اے فتح جنگ سونے کی چڑیا ثابت ہوئی ہے دھوتی لنگوٹی میں فتح جنگ پہنچنے والے افسران کروڑ پتی بن چکے ہیں مقامی حکومتوں کے پہلے دور میں نیواسلام آباد انٹرنیشنل ائیر پورٹ کے اعلان کے ساتھ ہی فتح جنگ انوسٹرز کی توجہ کا مرکز بن گیا تھا دو درجن کے قریب ہاؤسنگ سوسائیٹیوں نے ائیر پورٹ کے نام پر تحصیل انتظامیہ کی ملی بھگت سے خوب لوٹ مار کی بغیر این او سی کے کاغذوں میں پلاٹ فروخت کر کے اربوں روپے بٹور لیے 2004میں ٹی ایم اے کی ملی بھگت سے ہاؤسنگ سوسائیٹی مالکان نے ڈائری نمبر کو این او سی نمبر ظاہر کر کے عوام کو دونوں ہاتھوں سے لوٹا، افسران کی ملی بھگت سے سوسائیٹیوں کو ڈیل کرنے والا تحصیل آفیسر پی اینڈ سی چودھری یونس نے دیکھتے ہی دیکھتے کروڑوں کے اثاثے بنا لیے اور فتح جنگ میں بڑے ٹرانسپورٹر وں کی صف میں شامل ہو گئے ٹیوٹا ہائی ایس سروس فتح جنگ ،راولپنڈی اور اسلام آباد میں چلتی رہی فتح جنگ کے پوش علاقہ ریلوے روڈ(نئی آبادی) پرایک عالی شان فلک بوس بنگلہ تعمیر کرایااور اس کے علاوہ فتح جنگ کے مہنگے علاقوں میں کئی پلاٹ خریدے اورقانون کی نگاہ سے بچنے کیلئے انکو اپنے عزیزو اقارب کے نام کروایااور بنگلے کی تعمیر کیلئے ہاؤس بلڈنگ سے قرض لے کر کالے دھندے کو سفید کیا موصوف 2001سے فتح جنگ میں تعینات ہے نئی حکومت کے تحت کچھ عرصہ قبل چودھری یونس کا تبادلہ ٹی ایم اے دینہ میں ہوا مرضی کے خلاف اسٹیشن ملنے پر آرڈر کی تعمیل ہی نہیں کی اور بدستور فتح جنگ میں موجود ہے قبل ازیں بھی تحصیل ناظم سردار ظہیر افضل کی شکایت پر موصوف کا تبادلہ کوٹلی ستیاں ہو گیا تھاتاہم سابق ٹی ایم او ملک واجدکے ذریعے تحصیل ناظم کے ساتھ معاملات طے ہونے پر تبادلہ کینسل ہو گیا اسی سمجھوتے کے تحت موجودہ تحصیل ناظم نے تین ہاؤسنگ سوسائیٹیوں کو این او سی جاری کیے جو نیگیٹیو زون میں ہیں (ق)لیگ کی حکومت کے خاتمے کے بعد بھی صورتحا یوں کی توں ہے حکمران جماعتوں کے مقامی رہنماؤں کی اس معاملہ میں خاموشی عوام کیلئے سوالیہ نشان ہے ۔ چودھری یونس نے اپنے مؤقف میں کہا کہ میں ہاؤس بلدنگ سے قرض لے کر مکان تعمیر کر رہا ہوں ٹرانسپورٹ میرے بہنوئی اور دیگر رشتہ داروں کی ہے کسی سوسائیٹی کو قواعد سے ہٹ کر این او سی جاری نہیں کیا
03-01-2009 16:57 Attock News
Quote this article in websiteFavouredPrintSend to friendRelated articlesSave this to del.icio.us
This entry was posted on 03-01-2009 16:57. . . . You can follow any responses to this entry through the RSS 2.0 feed.
This article was favoured 255 time. . . . You can leave a comment. . . .
Last update on 03-01-2009 16:57
Views: 19397
Users' Comments (0)RSS feed comment
Average user rating
   (0 vote)
Only registered users can comment an article. Please login or register.

No comment posted

2007-2014
< Prev   Next >